All Rounder

آپ نے لفظ آل راونڈر بارہا سنا ہو گا، زیادہ تر یہ لفظ کھیل کے میدان سے جڑا ہوا ہے مگر میں آج آپ کے سامنے آل راؤنڈرز کے بارے میں اپنا نقطہ نظر پیش کرنے جا رہا ہوں لازم نہیں کہ آپ میرے خیالات سے اتفاق کریں لیکن اپنی آراء اور تنقید سے ضرور بہرہ مند فرمائیےگا۔

آپ سب جانتے ہیں آل راؤنڈر کا مطلب ہرفن مولا آدمی ہوتا ہے. یہ ہرکام میں ٹانگ اڑاتا رہتا ہے. آل راؤنڈر چونکہ کسی ایک فیلڈ میں کامیاب نہیں ہوا ہوتا اس لیے وہ ہر جگہ اپنی قسمت آزماتا ہے. ہمارے معاشرے میں ہرفن مولا ہونے کی وجہ سے آل راؤنڈر کی کافی عزت ہوتی ہے. یہ بجلی کی وائرنگ بھی کرتا ہے گھروں میں سفیدیوں کے ٹھیکے بھی پکڑتا ہے ماہ رمضان میں پکوڑوں کا کام کرتا ہے تو چاند رات کو چوڑیوں کا اسٹال بھی لگا لیتا ہے اور تربوز کے سیزن میں ہدوانوں کا ٹرک بھی اترواتا ہے توشادی کے سیزن میں دیگوں کے آرڈر بھی پکڑتا ہے لیکن چونکہ کسی ایک شعبے میں مہارت نہ ہونے کی وجہ سے اکثر آل راؤنڈر کی کی گئی وائرنگ پٹاخہ مار کر گھر جلا دیتی ہے. کبھی دیگ میں نمک تیز ہو جاتا ہے تو کبھی سارے ہدوانے (تربوز) کچے نکل آتے ہیں۔

ہمارے ہاں چونکہ آل راؤنڈر کی اصطلاح عام طور پہ کرکٹ کے کھیل میں استعمال ہوتی ہے. آل راونڈر صاحب تھوڑی بہت بیٹنگ کرتے ہیں ہلکی پھلکی گیند بازی بھی کر لیتے ہیں اور دوران میچ زیر ناف گیند لگنے کی وجہ سے زخمی ہونے والے وکٹ کیپر کی جگہ وکٹ کیپنگ کے فرائض بھی سرانجام دیتے ہیں، فیلڈنگ بھی باقی کھلاڑیوں سے قدرے بہتر ہوتی ہے لیکن جب بھی کبھی میچ میں مشکل صورتحال آ جائے اور آل راؤنڈر صاحب پرفارم نہ کرسکیں تو ان پر کوئی خاص ملبہ نہیں گرتا کیونکہ میچ جتوانا تو اسپیشسلٹ گیند بازوں اور بلےبازوں کا کام ہوتا ہے. یوں یہ ایک خوش قسمت کھلاڑی ہوتا ہے اور گیارہ کی ٹیم میں ایک سے دو آل راونڈر لازمی ہوتے ہیں ہمارے ہاں انکی تعداد زیادہ بھی ہوتی ہے۔

یوں کہہ لیجیے کہ آل راؤنڈر آلو کے جیسی وہ سبزی ہے جو ہر سالن میں فٹ ہو جاتی ہے۔ ترقی یافتہ معاشروں میں آل راؤنڈر کی اتنی وقعت نہیں ہوتی ہر شعبے میں متعلقہ شعبے کے ماہرین کو ترجیح دی جاتی ہے. کل وقتی پروفیشنل کی مانگ ہے جز وقتی موسمی ماہرین کی زندگی کافی دشوار ہوتی ہے۔

موضوع کو ذرا پاکستانی سیاست سے ریلیٹ کرتے ہیں. ہم ملک میں سرکردہ سیاسی پارٹیوں اور انکے بانیان یا موجودہ عہدےداروں کا سرسری سا جائزہ لیتے ہیں ۔ ۔

مسلم لیگ پاکستان کی بانی جماعت ہے لیکن قیام پاکستان کے بعد ڈکٹیٹروں نے اس کو تختہ مشق بنائے رکھا اور خوب بلتکار کیا۔ مسلم لیگ قیادت سے محروم ہو رہی  اور ہر کسی نے حروف تہجی کے حساب سے مسلم لیگ ا,ب,ت سے ے تک بنا ڈالی.عہد حاضر میں مسلم لیگ ن سب سے بڑی جماعت ہے اور برسراقتدار ہے. مسلم لیگ کی قیادت سن انیس سو اسی کی دہائی میں سیاست میں آئی نواز شریف اور شہباز شریف دوران تعلیم اپنے کاروبار میں حصہ لینا شروع ہو گئے تھے تعلیم سے فراغت کے بعد سیاست میں آ گئے اور تب سے آج پارٹی چلا رہے ہیں. مسلم لیگ کے بعد مسلم لیگ ق ہے جو ڈکٹیٹر نے تیار کی بانیان میں گجرات کے چودھری برادران ہیں. چودھری برادران کل وقتی سیاستدان ہیں اور کافی مضبوط سیاسی پس منظر ہے 2002 تا 2007 پنجاب اور وفاق میں حکومت کی تاہم آجکل ایک قومی اسمبلی کی سیٹ کے ساتھ اکیلی ہی سواری ہیں. پیپلزپارٹی ذوالفقارعلی بھٹو نے بنائی جو اوائل عمری میں ہی سیاست میں آئے مضبوط گھرانے سے تعلق تھا آپ کی بنائی پارٹی نے عروج اور زوال دیکھے کئی بار حکومت میں آئی. پارٹی کے اکثریت منتخب نمائندوں کا تعلق بڑے سیاسی گھرانوں سے ہے۔

اے این پی باچا خان کی خدائی خدمتگار سے نیشنل عوامی پارٹی پھر عوامی نیشنل پارٹی بنی مضبوط سیاسی کلچر ہے منجھے ہوئے سیاستدان انکے پاس موجود ہیں۔

ایم کیو ایم الطاف حسین نے بنائی یہ ایک اسٹوڈنٹ تنظیم آل پاکستان مہاجر سٹوڈنٹ موومنٹ سے مہاجر قومی موومنٹ پھر متحدہ قومی موومنٹ بنی.عروج و زوال دیکھے آجکل بھی مدوجزر کا شکار ہے. گراس روٹ پہ سب سے زیادہ آرگنائزڈ پارٹی ہے۔

آخر میں ذکر پاکستان تحریک انصاف کا جس کے بانی ممتاز آل راؤنڈر عمران خان ہیں۔

دوستو آپ نے اپنے اردگرد مشاہدہ کیا ہوگا ہمارے عزیز رشتہ دار جب اپنی سروس سے ریٹائرڈ ہوتے ہیں تو اکثر گھر بیٹھ کر آرام کرتے ہیں اور کچھ لوگ اپنا کاروبار شروع کر دیتے ہیں. ان میں زیادہ تر وہ لوگ ہوتے ہیں جو وہ کاروبار شروع کرتے ہیں جس کا انکو کوئی تجربہ نہیں ہوتا اور آخر میں ساری سروس کی کمائی سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں۔ ناتجربہ کاری آڑے آ جاتی ہے، سیانے سچ کہہ گئے ہیں جسکا کام اسی کو ساجھے۔

موضوع کی طرف واپس آتے ہیں پاکستان تحریک انصاف جناب عمران خان نے بنائی جن کی قیادت میں کرکٹ کریزی پاکستانی قوم کو ورلڈکپ کا تحفہ ملا. قریب چالیس سال کی عمر میں متعلقہ شعبے سے ریٹائر ہوئے. آپ سب جانتے ہیں کہ آپ ایک آل راونڈر تھے. لیکن آپ جیت کا کریڈٹ باقی گیارہ کھلاڑیوں کو دینے کو تیار نہیں ان کے مطابق وہی باولر, بیٹسمین اور فیلڈر تھے انہوں نے ہی ورلڈکپ تن تنہا جیتا. اس عظیم کامیابی کے بعد آپ ریٹائر ہوئے ایک بہت بڑے خیراتی کینسر ہسپتال کی بنیاد ڈالی پاکستان سمیت پوری دنیا نے چندے کی صورت میں آپکی مدد کی. میاں نوازشریف نے بطور وزیراعظم ہسپتال کیلیے زمین الاٹ کروائی۔

ہسپتال کو بہت کامیابی ملی اور جناب ٹھہرے آل راؤنڈر، مقبولیت کو کیش کروانے کا سوچا اور آپ سیاست میں کود پڑے. آپ کو سیاست کا کوئی تجربہ نہیں تھا نہ ہی سیاسی پس منظر تھا.انتخابی سیاست سے آپ یکسر نابلد تھے البتہ کرکٹ کی سیاست میں آپ اپنا ثانی نہیں رکھتے تھے. تقریباً پندرہ سال تک آپکو کوئی خاص کامیابی حاصل نہ ہو سکی. مشہور برطانوی کاروباری شخصیت سر گولڈ سمتھ کی بیٹی جمائمہ جو آپکی بیگم تھی انکا کافی سرمایہ آپ کھو کھاتے ڈال گئے پارٹی چلانے کیلیے جناب چیئرمین کو جوا کھیلنا پڑ گیا جس کا اعتراف اپنی کتاب میں موصوف کرچکے ہیں۔

سن دو ہزار گیارہ میں فرشتوں نے دوبارہ پاکستان تحریک انصاف میں جان ڈالی اور پچھلے انتخابات میں قابل ذکر کامیابی سمیٹ لی. لیکن آپ کو وہ ہضم نہ ہوئی کیونکہ آپ کو وزیراعظم بننے کا جنون کی حد تک شوق ہے اور اس کیلیے کسی بھی حد تک جانے کو تیار ہیں.آپ سول نافرمانی تک بھی جا چکے ہیں. آجکل شہر بند کرنے کی باتیں کر رہے ہیں وہ شہر جو پندرہ سالہ بدترین دہشتگردی کے بعد کھلنے شروع ہوئے ہیں اور بیرونی سرمایہ کاری آنا شروع ہوئی ہے۔

عوامی سیاست چونکہ کرکٹ نہیں ہے اس لئیے یہاں کرکٹ والی چالیں کام نہیں آتیں، آپ کرکٹ کی طرح یہاں بھی تنہا فیصلہ سازی کر کے خود کو آل راونڈر ثابت کرنے کے چکروں میں ہر بار منہ کے بل گرتے ہیں مگر سبق سیکھنے کی بجائے نئے سرے سے نئی غلطی کرنے کیلئیے کمر بستہ ہو جاتے ہیں۔ نتیجہ بھی ہر بار وہی نکلتا ہے یعنی ناکامی۔ مگر اس دوران آپ ملک کا نقصان اور اداروں کو بے توقیر کرتے چلے جاتے ہیں۔ ہماری بد قعسمتی رہی ہے کہ خود کو آل راونڈر ثابت کرنے کے چکروں میں طالع آزما بھی نشترآزمائی کرتے رہے ہیں جس کہ نتیجہ کبھی بھی خوشگوار نہیں نکلا۔

اس ملک کو آگے بڑھنا ہے تو ہمیں آل راونڈرز نہیں بلکہ ماہرین تیار کرنے ہوں گے۔

2 thoughts on “All Rounder

  • October 4, 2016 at 11:17 pm
    Permalink

    بہت اچھا لکھا ھے. اچھا خاصہ لکھ لیتے ہو جاری رکھو لکھنا.

    Reply
  • October 5, 2016 at 3:59 pm
    Permalink

    عمدہ تحریر. آل راؤنڈر کو کلین بولڈ کر دیا یار
    لکهتے رہا کریں
    سلامتی کی دعا

    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *